دانش مند قران پاک سے

تفہیم القرآن – سورۃ نمبر 2 البقرة – آیت نمبر 269

أَعـوذُ بِاللهِ مِنَ الشَّيْـطانِ الرَّجيـم

بِسْمِ اللّهِ الرَّحْمنِ الرَّحِيْمِ

يُؤتِى الحِكمَةَ مَن يَّشَآءُ‌‌ ۚ وَمَن يُّؤتَ الحِكمَةَ فَقَد اُوتِىَ خَيرًا كَثِيرًا‌ ؕ وَمَا يَذَّكَّرُ اِلَّاۤ اُولُوا الاَلبَابِ

ترجمہ: جس کو چاہتا ہے حکمت عطا کرتا ہے، اور جس کو حکمت ملی ، اُسے حقیقت میں بڑی دولت مل گئی۔309 اِن باتوں سے صرف وہی لوگ سبق لیتے ہیں ،جو دانشمند ہیں

تفسیر:   سورة الْبَقَرَة  309

حکمت سے مراد صحیح بصیرت اور صحیح قوت فیصلہ ہے۔ یہاں اس ارشاد سے مقصود یہ بتانا ہے کہ جس شخص کے پاس حکمت کی دولت ہوگی، وہ ہرگز شیطان کی بتائی ہوئی راہ پر نہ چلے گا، بلکہ اس راہ کشادہ کو اختیار کرے گا جو اللہ نے دکھائی ہے۔ شیطان کے تنگ نظر مریدوں کی نگاہ میں یہ بڑی ہوشیاری اور عقل مندی ہے کہ آدمی اپنی دولت کو سنبھال سنبھال کر رکھے اور ہر وقت مزید کمائی کی فکر ہی میں لگا رہے۔ لیکن جن لوگوں نے اللہ سے بصیرت کا نور پایا ہے، ان کی نظر میں یہ عین بےوقوفی ہے۔ حکمت و دانائی ان کے نزدیک یہ ہے کہ آدمی جو کچھ کمائے، اسے اپنی متوسط ضروریات پوری کرنے کے بعد دل کھول کر بھلائی کے کاموں میں خرچ کرے۔ پہلا شخص ممکن ہے کہ دنیا کی اس چند روزہ زندگی میں دوسرے کی بہ نسبت بہت زیادہ خوشحال ہو، لیکن انسان کے لیے یہ دنیا کی زندگی پوری زندگی نہیں، بلکہ اصل زندگی کا ایک نہایت چھوٹا سا جز ہے۔ اس چھوٹے سے جز کی خوش حالی کے لیے جو شخص بڑی اور بےپایاں زندگی کی بدحالی مول لیتا ہے، وہ حقیقت میں سخت بیوقوف ہے۔ عقل مند دراصل وہی ہے، جس نے اس مختصر زندگی کی مہلت سے فائدہ اٹھا کر تھوڑے سرمایے ہی سے اس ہمیشگی کی زندگی میں اپنی خوشحالی کا بندوبست کرلیا۔

Continue reading “دانش مند قران پاک سے”

يَاأَيُّهَا

انشا اللہ اللہ پاک نے قران مجید میں یا ایھل کہہ کر جس جس کو بھی خطاب کیا ہے ان تمام کو یک جا کرنے کی اپنے بساط بھر کوشش کررہا ہوں میرا مقصد یہ ہےکہ اللہ پاک نے اس طرح خطاب کرکے کیا سبق ہمیں دیا ہے

 يَاأَيُّهَا الَّذِينَ آمَنُوا کلام پاک میں۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔89 مرتبہ آیا ہے
يَاأَيُّهَا النَّاسُ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔15 مرتبہ آیا ہے
يَاأَيُّهَا النَّبِيُّ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔12 مرتبہ آیا ہے
يَاأَيُّهَا الرَّسُولُ      ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔3 مرتبہ آیا ہے
يَاأَيُّهَا الْإِنسَانُ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔2 مرتبہ آیا ہے
يَاأَيُّهَا الَّذِينَ كَفَرُوا۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔1 مرتبہ آیا ہے
يَاأَهْلَ الْكِتَابِ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔2 مرتبہ آیا ہے
يَاأَيُّهَا الَّذِينَ أُوتُوا الْكِتَابَ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔1 مرتبہ آیاہے
يَاأَيُّهَا الْمُزَّمِّلُ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔1 مرتبہ آیا ہے
يَاأَيُّهَا الْمُدَّثِّرُ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔1 مرتبہ آیا ہے
يَاأَيَّتُهَا النَّفْسُ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔1 مرتبہ آیا ہے
جملہ سورتیں۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔30 ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔جملہ   آیات۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔128

الحمدللہ

۔11 آیات۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔البقرہ

Holy Quran 2:104
يَاأَيُّهَا الَّذِينَ آمَنُوا لَا تَقُولُوا رَاعِنَا وَقُولُوا انظُرْنَا وَاسْمَعُوا ۗ وَلِلْكَافِرِينَ عَذَابٌ أَلِيمٌ

اے لوگو جو ایمان لائے ہو: رَاعِناَ نہ کہا کرو، بلکہ اُنظرنَا کہو اور توجہ سے بات کو سنو، یہ کافر تو عذاب الیم کے مستحق ہیں Continue reading “يَاأَيُّهَا”